ارضِ پاک نیوز نیٹ ورک

Arz-e-Pakistan News Network

Language:

Search

Foolproof Security on the eve of Urs of Data Ali Hajveri (RA) and Chehlum of Hazrat Imam Hussain (AS).    "سب کو بتانا مرشد آئے تھے، "عثمان مرزا کے تیور نہ بدلے.    "اپنے لیے اپنے ملک کیلیے ویکسین لگوائیں"،شیخ رشید کی قوم سے اپیل.    MoU signed between Punjab Hepatitis Control Program, Ferozsons Laboratories Limited and Inspectorate of Prisons.    Pakistan and Austria FMs meet in New York.    Prime Minister’s special aide Jamshed Cheema backs Qalandar Badshah.    "نیوزی لینڈ میں اتنی فورسز نہیں ہوں گی جتنی انہیں یہاں سیکیورٹی فراہم کی گئی".    Director General Punjab Emergency Department Regularized Services of 103 Rescuers.    CEO Vscopk Mian Afzal Javed distributes shields to participants.    "مشترکہ مقصد2021ء "کا انعقاد.    Awareness seminar against sexual harassment and violence against women organized by Lahore Police.    Police Challan shows involvement of Zahir Jaffer's father in the murder of Noor Mukadam.    Here’s Pak Boon, an elephant at the Taronga Zoo Sydney, enjoying a mud bath in the Australian sun.    Pakistan urges world to recognise new reality in Afghanistan.   

قانون کی دھجیاں بکھیرنے والے غنڈہ عناصرکو گرفتار کریں

ویب ڈیسک
10 Sep, 2021

10 ستمبر ، 2021

ویب ڈیسک
10 Sep, 2021

10 ستمبر ، 2021

قانون کی دھجیاں بکھیرنے والے غنڈہ عناصرکو گرفتار کریں

post-title

اہور ( اے پی این این ) کنال روڈ پر پیر صاحب کے جلوس سے راستہ مانگنے کی پاداش میں پیر کے مسلحہ چیلوں کا بزرگ شہری اور اس کے بیٹے پر بدترین تشدد ناک منہ پسلیاں توڑ کے لہو لہان جبکہ ڈنڈوں سے گاڑی چکنا چور کردی اور فائرنگ سے علاقے میں خوف و ہراس پھیلا دیا،چیلے جاتے جاتے تشدد کا شکار باپ بیٹے کے قیمتی موبائل گھڑی چھین اور گاڑی میں پڑا لائسنسی پستول بھی لے اڑے ،مقدمہ درج ہونے کے 25 دن گزرنے کے باوجود پولیس بااثر پیر کو گرفتار نہ کر سکی،اعلی حکومتی حکام اور پولیس پیر کو بچانے اور درخواست گزار کو پرچہ واپس لینے صلح کرنے کےلئے دباو ڈالنے لگی،درخواست گزار انصاف کے حصول کےلئے دربدر کی ٹھوکریں کھانے پر مجبور، تفصیلات کے مطابق چھٹے محرم کی شب جوہر ٹاون کا رہائیشی عادل شاہ اپنے 75 سالہ بزرگ باپ سید اقبال کو ڈاکٹر سے چیک کروانے کی غرض سے مال روڈ کی طرف جارہے تھے کہ فیروز پور روڈ انڈر پاس کے قریب پیر معصوم شاہ نامی شخص اپنے درجنوں چیلوں کے ہمراہ جلوس کی شکل میں نعرےبازی کرتے جارہے تھے جنہوں نے ساری سڑک بلاک کر رکھی تھی اور پیچھے سے آنے والی ٹریفک کو گزرنے کا راستہ نہیں دے رہے تھے اسی اثنا میں جلوس کے پیچھے گاڑی میں بیٹھے بزرگ شہری سید اقبال نے پیر کے چیلوں سے راستہ مانگا تو اسلحہ ڈنڈوں سے مسلحہ درجنوں چیلوں نے یکدم گاڑی پر ہلہ بول دیا اور بزرگ شہری کو راستہ مانگنے کی پاداش میں گاڑی سے نکال کر سڑک پے لٹا کے لاٹھیوں سے تشدد کا نشانہ بنانا شروع کردیا جس پر باپ کو بچانے کی غرض سے گاڑی سے نکلنے والے بیٹے عادل شاہ کو بھی چیلوں کے ہجوم نے تشدد کا نشانہ بنانا شروع کر دیا اور ایک چیلے نے پستول کا بٹ مار کے ناک توڑ دی بدترین تشدد سے باپ بیٹا لہو لہان ہوگئے اسی دوران پیر کے چیلوں نے دونوں باپ بیٹوں کے گاڑی میں پڑے دوقیمتی موبائل، لائسنسی پستول اور ہاتھ پر بندھی قیمتی گھڑی چھین کر فرار ہوگئے،تشدد کا شکار باپ بیٹے نے 15 کال کی تو تھانہ مسلم ٹاون کی پولیس کے آنے سے قبل ہی پیر اپنے چیلوں کو لے کر موقع سے فرار ہوگیا پولیس نے شدید زخمی باپ بیٹے کو ہسپتال منتقل کردیا جہاں وہ دو دن زیر علاج رہے،تھانہ مسلم ٹاون پولیس نے ملزمان کے خلاف مقدمہ نمبر 716/21 کے تحت اقدام قتل اسلحہ کے زور پرقیمتی ایشیا چھیننا،ہوائی فائرنگ جیسی 8 دفعات کے تحت مقدمہ درج کر لیا ہے ،درخواست گزار عادل شاہ نے اس ضمن میں میڈیا کو بتایا کہ پیر معصوم شاہ نامی شخص بڑا بااثر ہے اور اس کے خلاف اقدام قتل کا مقدمہ درج ہونے کے باوجود اس کو گرفتاری سے بچانے کےلئے حکومتی لوگ رکاوٹ بنے ہوئے ہیں اور پولیس بےگناہ باپ بیٹے کو انصاف دینے کی بجائے درخواست گزار کو پیر معصوم شاہ سے صلح کرنے کےلئے دباو ڈال رہی ہے جبکہ پیر معصوم شاہ فون پر مجھے مقدمے کی پیروی نہ چھوڑنے پر سنگین نوعیت کی دھمکیاں دے رہا ہے اور غنڈہ عناصر کو میرے پیچھے لگایا ہوا ہے مجھے اب بھی اس سے جان کا خطرہ ہے ،عادل شاہ نے وزیراعلی پنجاب اور آئی جی پنجاب سے اپیل کی ہے کہ وہ بااثر ظالم قانون کی دھجیاں بکھیرنے والے غنڈہ عناصر پیر معصوم شاہ کو گرفتار کرکے ہمیں انصاف دیں
 


APNN نیوز، APNN گروپ یا اس کی ادارتی پالیسی کا اس تحریر کے مندرجات سے متفق ہونا ضروری نہیں ہے۔

APNN News, the APNN Group or its editorial policy does not necessarily agree with the contents of this article.


عوامی بحث (0) تبصرے دیکھنے کے لئے کلک کریں Public discussion (0) Click to view comments
28 / 5 / 2021
Monday
1 : 23 : 31 PM