ارضِ پاک نیوز نیٹ ورک

Arz-e-Pakistan News Network

Language:

Search

UET لاہور انڈرگریجویٹ داخلہ فارم جمع کرانے کی آخری تاریخ.    Major progress in Lahore Police Anti-Drug Campaign.    "میرا ڈونا بلیسڈ ڈریم "کا پہلا ٹریلر جاری.    "پاکستان ممکنہ بھارتی جارحیت کا دفاع کرنے کے لیے تیار ہے".    Paperless driving license system is going to be introduced in Punjab.    Foolproof Security on the eve of Urs of Data Ali Hajveri (RA) and Chehlum of Hazrat Imam Hussain (AS).    "سب کو بتانا مرشد آئے تھے، "عثمان مرزا کے تیور نہ بدلے.    "اپنے لیے اپنے ملک کیلیے ویکسین لگوائیں"،شیخ رشید کی قوم سے اپیل.    MoU signed between Punjab Hepatitis Control Program, Ferozsons Laboratories Limited and Inspectorate of Prisons.    Pakistan and Austria FMs meet in New York.    Prime Minister’s special aide Jamshed Cheema backs Qalandar Badshah.    "نیوزی لینڈ میں اتنی فورسز نہیں ہوں گی جتنی انہیں یہاں سیکیورٹی فراہم کی گئی".    Director General Punjab Emergency Department Regularized Services of 103 Rescuers.    CEO Vscopk Mian Afzal Javed distributes shields to participants.   

شعیب اختر نے مصباح اور وقار کو آڑے ہاتھوں لے لیا

ویب ڈیسک
06 Sep, 2021

06 ستمبر ، 2021

ویب ڈیسک
06 Sep, 2021

06 ستمبر ، 2021

شعیب اختر نے مصباح اور وقار کو آڑے ہاتھوں لے لیا

post-title

اسلام آباد: قومی کرکٹ ٹیم کے سابق فاسٹ بولر  شعیب اختر نے پاکستان کرکٹ ٹیم کے ہیڈ کوچ مصباح الحق اور بولنگ کوچ وقار یونس کے کوچنگ کے عہدوں سے دستبردار ہونے پر برہمی کا اظہار کیا ہے۔
راولپنڈی ایکسپرس شعیب اختر کانجی ٹی وی سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے کہنا تھا کہ  مصباح الحق اور وقار یونس نے جو کام کیا اسے چھوڑ کر بھاگنا کہتے ہیں۔
شعیب اختر نے کہا کہ ورلڈ کپ تھا،ایک اہم  ایونٹ  تھا  پورا زور لگانا چاہیے تھا لیکن جو فیصلہ ان دونوں نے کیا اسے وہ کمزوری ہی کہیں گے۔شعیب اختر نے کہا کہ مصباح کو  پتا تھا کہ رمیز راجہ کی موجودگی میں کوچنگ مشکل ہوگی، مصباح اور  وقار بے نقاب ہو کر بھاگے ہیں، پی سی بی کا قصور ہے جو مصباح اور وقار کو لایا۔
شعیب اختر نے ورلڈ کپ کے لیے منتخب کی گئی ٹیم پر بھی تنقید کی اور کہا کہ ٹیم میں اعظم خان آجاتے ہیں شعیب ملک نہیں آتے، وہاب ریاض کو بھی ٹیم میں ہونا چاہیے تھا۔


APNN نیوز، APNN گروپ یا اس کی ادارتی پالیسی کا اس تحریر کے مندرجات سے متفق ہونا ضروری نہیں ہے۔

APNN News, the APNN Group or its editorial policy does not necessarily agree with the contents of this article.


عوامی بحث (0) تبصرے دیکھنے کے لئے کلک کریں Public discussion (0) Click to view comments
28 / 5 / 2021
Monday
1 : 23 : 31 PM