ارضِ پاک نیوز نیٹ ورک

Arz-e-Pakistan News Network

Language:

Search

"میں ناگن، تو سپیرا " پوسٹ سوشل میڈیا پر وائرل.    "منی ہائسٹ "(Money Heist )کاآخری حصہ پاکستان سمیت دنیا بھر میں آج ریلیز کیا جائے گا.    NA-133 کا ضمنی انتخاب.    NA-133 ضمنی انتخاب.    NCA میں "دی سندھو پراجیکٹ اینگما آف روٹس " کے عنوان سے فن پاروں کی نمائش.    KIPS-CSS کی جانب سے CSSمیں کامیاب امیدواروں کے اعزاز میں عشائیہ.    NCA میں ٹریڈیشنل آرٹ کورسز ورکشاپ کی اختتامی تقریب.    NA-75 الیکشن کمیشن کی رپورٹ پر ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان کا ردعمل.    NA-133 ضمنی انتخاب : جمشید اقبال چیمہ کی اپیلوں پر الیکشن ٹربیونل کا فیصلہ جاری.    UAE گولڈن جوبلی: گلوبل ولیج تصویری مقابلہ درہم 50,000 تک جیتنے کا موقع.    IMFکے ساتھ معاملات طے پا گئے ، معاہدہ اسی ہفتے ہو گا، شوکت ترین.    UET لاہور انڈرگریجویٹ داخلہ فارم جمع کرانے کی آخری تاریخ.    Major progress in Lahore Police Anti-Drug Campaign.    "میرا ڈونا بلیسڈ ڈریم "کا پہلا ٹریلر جاری.    "پاکستان ممکنہ بھارتی جارحیت کا دفاع کرنے کے لیے تیار ہے".   

پیما کی جانب سے ڈاکٹروں اور دوا ساز اداروں کے لیے ضابطہ اخلاق کا خیر مقدم

ویب ڈیسک
23 Nov, 2021

23 نومبر ، 2021

ویب ڈیسک
23 Nov, 2021

23 نومبر ، 2021

پیما کی جانب سے ڈاکٹروں اور دوا ساز اداروں کے لیے ضابطہ اخلاق کا خیر مقدم

post-title

پاکستان اسلامک میڈیکل ایسوسی ایشن (پیما) نے ڈاکٹروں اور دوا ساز اداروں کے مابین تعلقات پر مبنی حکومت اور ڈریپ کے حالیہ ضابطہ اخلاق کو سراہا ہے اور کہا ہے کہ اس عمل کو منفی انداز میں استعمال نہیں ہونا چاہیے۔پیما کےمرکزی صدر پروفیسر ڈاکٹر خبیب شاہد اور جنرل سیکرٹری پروفیسر ڈاکٹر محمدطاہر چوہدری نے ایک بیان میں اس بات کا اعادہ کیا کہ طب ایک انتہائی مقدس پیشہ ہے اور تمام ڈاکٹرز اس پیشے میں خدمت کی نیت سے آتے ہی۔ کچھ ایسی مثالوں کے نتیجے میں جہاں غیر مناسب اور اور پیسوں کے لین دین پر مبنی معاہدے سننے میں آئے، ان کی وجہ سے پوری ڈاکٹرز کمیونٹی کو خفت اٹھانی پڑتی ہے۔انہوں نے کہا کہ بہت سے سے معاملات گرے زون میں آتے ہیں جن کی وضاحت کے لیے گائیڈ لائنیز مرتب کرنے کی اشد ضرورت ہے۔ پیما نے  آج سے 6 سال پہلے ڈاکٹروں اور دوا ساز اداروں کے مابین تعاون کے بارے میں گائیڈ لائنز مرتب کیں اور اپنی کانفرنسز میں میں باقاعدگی سے اس موضوع پر سیشنز بھی کیے۔ اس بارے میں کوئی ایسا طرز عمل اپنایا جائے جس سے کسی کو نشانہ بنانے یا رشوت ستانی کی بجائے معاشرے میں اصلاح ہو ۔ امید ہے ان اقدامات سے طب کے شعبے میں بہتری آئے گی۔ پیما یہ بھی مطالبہ کرتی ہے کہ اسی قسم کی تطہیر کا عمل معاشرے کے دیگر پیشہ ورانہ شعبوں میں بھی شروع کیا جانا چاہیے تاکہ جن فوائد کی امید ہے، ان سے پورا معاشرہ مستفید ہو۔ 


APNN نیوز، APNN گروپ یا اس کی ادارتی پالیسی کا اس تحریر کے مندرجات سے متفق ہونا ضروری نہیں ہے۔

APNN News, the APNN Group or its editorial policy does not necessarily agree with the contents of this article.


عوامی بحث (0) تبصرے دیکھنے کے لئے کلک کریں Public discussion (0) Click to view comments
28 / 5 / 2021
Monday
1 : 23 : 31 PM