ارضِ پاک نیوز نیٹ ورک

Arz-e-Pakistan News Network

Language:

Search

"  لڑکیاں صرف ماں کی کوکھ یا پھر قبر میں محفوظ ہیں" طالبہ نے خودکشی کر لی.    "میں ناگن، تو سپیرا " پوسٹ سوشل میڈیا پر وائرل.    "منی ہائسٹ "(Money Heist )کاآخری حصہ پاکستان سمیت دنیا بھر میں آج ریلیز کیا جائے گا.    NA-133 کا ضمنی انتخاب.    NA-133 ضمنی انتخاب.    NCA میں "دی سندھو پراجیکٹ اینگما آف روٹس " کے عنوان سے فن پاروں کی نمائش.    KIPS-CSS کی جانب سے CSSمیں کامیاب امیدواروں کے اعزاز میں عشائیہ.    NCA میں ٹریڈیشنل آرٹ کورسز ورکشاپ کی اختتامی تقریب.    NA-75 الیکشن کمیشن کی رپورٹ پر ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان کا ردعمل.    NA-133 ضمنی انتخاب : جمشید اقبال چیمہ کی اپیلوں پر الیکشن ٹربیونل کا فیصلہ جاری.    UAE گولڈن جوبلی: گلوبل ولیج تصویری مقابلہ درہم 50,000 تک جیتنے کا موقع.    IMFکے ساتھ معاملات طے پا گئے ، معاہدہ اسی ہفتے ہو گا، شوکت ترین.    UET لاہور انڈرگریجویٹ داخلہ فارم جمع کرانے کی آخری تاریخ.    Major progress in Lahore Police Anti-Drug Campaign.    "میرا ڈونا بلیسڈ ڈریم "کا پہلا ٹریلر جاری.   

غیر قانونی تعمیرات کے ذمہ داروں کا تعین کرنا ہو گا:  وزیرِ اعلیٰ سندھ

ویب ڈیسک
08 Dec, 2021

08 دسمبر ، 2021

ویب ڈیسک
08 Dec, 2021

08 دسمبر ، 2021

غیر قانونی تعمیرات کے ذمہ داروں کا تعین کرنا ہو گا:  وزیرِ اعلیٰ سندھ

post-title

وزیرِ اعلیٰ سندھ مراد علی شاہ کا کہنا ہے کہ کراچی کے نسلہ ٹاور کو گرانے کے بجائے کوئی اور طریقہ بھی ہو سکتا تھا جیسے کہ اسلام آباد میں بڑے بڑے لوگوں کے مکانات کو ریگولرائز کیا گیا۔
اسلام آباد میں احتساب عدالت کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے وزیرِ اعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے کہا کہ عمارت کو ریگولرائز کرنے کی بات کر رہا ہوں، جنہوں نے منظوری دی ان کو چھوڑنے کی نہیں، نسلہ ٹاور کی جن لوگوں نے منظوری دی ان کو سزا ہونی چاہیئے۔
انہوں نے کہا کہ اسلام آباد کی ایک بلڈنگ کے جرمانے کی قیمت شاید نسلہ ٹاور کی قیمت سے زائد ہے، غیر قانونی تعمیرات کا کون ذمے دار ہے اس کا تعین کرنا ہو گا، غیر قانونی تعمیرات سے متعلق کیسز 25، 30 سال پرانے ہیں، ہم عدالت کے حکم کے سامنے بے بس ہیں۔
مراد علی شاہ کا کہنا ہے کہ گورنر سندھ عمران اسماعیل سے ملاقات کی ہے، انہیں کہا کہ جو بھی خیالات ہیں لکھ کر دیں، گورنر سندھ سے ملکی صورتِ حال پر بات ہوئی، بلز پر بات نہیں ہوئی۔
ان کا کہنا ہے کہ گورنر سندھ کو بتایا کہ آپ کے خیالات ٹی وی پر سن چکا ہوں، ان سے کہا کہ لکھ کر بھیج دیں آپ کا مؤقف کابینہ کے سامنے رکھ دوں گا۔
وزیرِ اعلیٰ سندھ کا کہنا ہے کہ جب بھی عدالت بلائے گی حاضر ہوں گے، ہمارے کیس کا ریکارڈ اسلام آباد ہائی کورٹ نے منگوا لیا ہے۔انہوں نے کہا کہ کمیشن بنانے جا رہے ہیں جو نشاندہی کرے گا کہ کس کے حکم پر غیر قانونی تعمیرات ہوئیں، نسلہ ٹاور میں بے ضابطگی ہوئی تو جرمانہ وغیرہ کر کے ریگولرائز ہو سکتی ہے۔

مراد علی شاہ نے بتایا کہ سندھ حکومت نے کم سے کم تنخواہ 25 ہزار روپے رکھی ہے، جبکہ باقی صوبوں میں اس میں اضافہ نہیں کیا گیا۔انہوں نے کہا کہ تنخواہوں والے معاملے پر بھی سپریم کورٹ کا اسٹے آرڈر آ گیا ہے، اس پر بھی ہم پابند ہیں کیونکہ ابھی احتساب عدالت کے باہر کھڑا ہوں۔
مراد علی شاہ نے کہا کہ پی ڈی ایم سے کچھ اختلافات ہیں لیکن وفاقی حکومت سے تو کوئی خوش نہیں۔انہوں نے وفاقی حکومت پر طنز کرتے ہوئے کہا کہ یہ بہت بے حس لوگ ہیں، کل یہ کہیں گے کہ بھوک سے کون مر رہا ہے؟ سندھ کے وزیرِ اعلیٰ نے مزید کہا کہ یہ کہیں گے کہ لوگ کھانا تو کھا ہی رہے ہیں، بس یہ نکلیں، لوگوں کی جان چھوڑیں۔


APNN نیوز، APNN گروپ یا اس کی ادارتی پالیسی کا اس تحریر کے مندرجات سے متفق ہونا ضروری نہیں ہے۔

APNN News, the APNN Group or its editorial policy does not necessarily agree with the contents of this article.


عوامی بحث (0) تبصرے دیکھنے کے لئے کلک کریں Public discussion (0) Click to view comments
28 / 5 / 2021
Monday
1 : 23 : 31 PM