ارضِ پاک نیوز نیٹ ورک

Arz-e-Pakistan News Network

Language:

Search

Prime Minister’s special aide Jamshed Cheema backs Qalandar Badshah.    "نیوزی لینڈ میں اتنی فورسز نہیں ہوں گی جتنی انہیں یہاں سیکیورٹی فراہم کی گئی".    Director General Punjab Emergency Department Regularized Services of 103 Rescuers.    CEO Vscopk Mian Afzal Javed distributes shields to participants.    "مشترکہ مقصد2021ء "کا انعقاد.    Awareness seminar against sexual harassment and violence against women organized by Lahore Police.    Police Challan shows involvement of Zahir Jaffer's father in the murder of Noor Mukadam.    Here’s Pak Boon, an elephant at the Taronga Zoo Sydney, enjoying a mud bath in the Australian sun.    Pakistan urges world to recognise new reality in Afghanistan.    CCPO Directs Officers to Conduct Surprise Visits of Police Stations.    SPA CEYLON outlet now in Lahore.    VALIENT PUNJAB RANGERS IN 65 WAR.   

پاکستان نے 5 جی متعارف کروانے کا ارادہ ظاہر کر دیا

ویب ڈیسک
07 Sep, 2021

07 ستمبر ، 2021

ویب ڈیسک
07 Sep, 2021

07 ستمبر ، 2021

پاکستان نے 5 جی متعارف کروانے کا ارادہ ظاہر کر دیا

post-title

اسلام آباد: گزشتہ 3 برسوں میں ایک ارب 20 کروڑ ڈالر غیر ملکی براہِ راست سرمایہ کاری راغب کرنے کے بعد ٹیلی کام انڈسٹری کی مارکیٹ کا حجم بڑھ کر 16 ارب 90 کروڑ ڈالر ہوگیا ہے اور اب وزارت اطلاعات اور ٹیلی کام 2023 میں 5 جی متعارف کرانے کا ارادہ رکھتی ہیں۔
نجی اخبار کی رپورٹ کے مطابق وزارت نے کہا کہ غیر ملکی سرمایہ کاروں نے بھی اس ہدف کا خیر مقدم کیا ہے۔
وزیر اعظم عمران خان کو اس شعبے کی کارکردگی پر حالیہ پریزنٹیشن میں وزارت نے ملک بھر میں ڈیجیٹلائزیشن کی مستقبل کی ضروریات، 5G جیسی مستقبل کی تکنیکی ضروریات متعارف کروانے کے علاوہ یونیورسل سروس فنڈ (یو ایس ایف) کے ذریعے ملک کے دور دراز اور پسماندہ علاقوں میں بھی ٹیلی کام خدمات اور انٹرنیٹ کی توسیع کے لیے "ڈیپ فائبرائزیشن" کے لیے شروع کیے گئے منصوبوں پر روشنی ڈالی۔
سال 22-2018 کے دوران ملک بھر میں 10 ہزار کلومیٹر سے زائد آپٹیکل فائبر کیبل بچھائی جائے گی جو ایک ہزار 175 قصبوں اور یونین کونسلوں کو تیز رفتار انٹرنیٹ فراہم کرے گی۔
وزارت نے کہا کہ یو ایس ایف منصوبوں کے تحت بلوچستان میں شاہراہوں اور موٹر ویز سمیت 1800 کلومیٹر سے زائد غیر محفوظ سڑکوں کے نیٹ ورک کا احاطہ کیا ہے۔
ڈیپ فائبرائزیشن منصوبے کی اہمیت پر تبصرہ کرتے ہوئے وزیر انفارمیشن ٹیکنالوجی سید امین الحق نے کہا کہ حکومت 23-2022 کے اختتام تک آئی ٹی سروسز کی برآمدات کو 5 بلین ڈالر تک بڑھانے پر بھاری سرمایہ کاری کر رہی ہے۔
ان کا کہنا تھا کہ ہم چھوٹے شہروں کے لوگوں کو سستے اور تیز رفتار انٹرنیٹ کی فراہمی یقینی بنائیں گے اور مجھے یقین ہے کہ خیبرپختونخوا اور گلگت بلستان کی لڑکیاں بھی اپنے مقامی علاقوں سے بطور فری لانسر کام کرسکیں گی۔
سال 21-2020 میں آئی ٹی سروسز کی ملکی برآمدات کے 47 فیصد سے بڑھ کر 2 ارب 10 کروڑ ڈالر ہوگئیں۔
رپورٹ میں نشاندہی کیا گیا کہ یو ایس ایف نے پسماندہ علاقوں میں 29 ارب روپے کے 43 منصوبوں کا معاہدہ کر کے مستقبل میں ڈیجیٹل ترقی کے لیے ٹیلی کام انفرا اسٹرکچر ڈیولپمنٹ میں وسیع پیمانے پر کردار ادا کیا ہے۔
اس میں جنوبی بلوچستان، سابقہ فاٹا اور اندرون سندھ کے 65 سے زائد اضلاع شامل ہیں جو 2 کروڑ 50 لاکھ سے زائد آبادی پر مشتمل ہیں۔
وزارت کا کہنا تھا کہ آزاد کشمیر اور گلگت بلتستان کے لیے آئندہ اسپیکٹرم کی نیلامی نیکسٹ جنریشن موبائل سروسز کے لیے ان علاقوں میں ٹیلی کام اور براڈ بینڈ خدمات کو بہتر بنانے میں مدد دے گی۔
ساتھ ہی رپورٹ میں اس بات پر بھی روشنی ڈالی گئی کہ 40 آئی ٹی کمپنیاں پاکستان اسٹاک ایکسچینج میں درج ہیں۔
 


APNN نیوز، APNN گروپ یا اس کی ادارتی پالیسی کا اس تحریر کے مندرجات سے متفق ہونا ضروری نہیں ہے۔

APNN News, the APNN Group or its editorial policy does not necessarily agree with the contents of this article.


عوامی بحث (0) تبصرے دیکھنے کے لئے کلک کریں Public discussion (0) Click to view comments
28 / 5 / 2021
Monday
1 : 23 : 31 PM