ارضِ پاک نیوز نیٹ ورک

Arz-e-Pakistan News Network

Language:

Search

"میں ناگن، تو سپیرا " پوسٹ سوشل میڈیا پر وائرل.    "منی ہائسٹ "(Money Heist )کاآخری حصہ پاکستان سمیت دنیا بھر میں آج ریلیز کیا جائے گا.    NA-133 کا ضمنی انتخاب.    NA-133 ضمنی انتخاب.    NCA میں "دی سندھو پراجیکٹ اینگما آف روٹس " کے عنوان سے فن پاروں کی نمائش.    KIPS-CSS کی جانب سے CSSمیں کامیاب امیدواروں کے اعزاز میں عشائیہ.    NCA میں ٹریڈیشنل آرٹ کورسز ورکشاپ کی اختتامی تقریب.    NA-75 الیکشن کمیشن کی رپورٹ پر ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان کا ردعمل.    NA-133 ضمنی انتخاب : جمشید اقبال چیمہ کی اپیلوں پر الیکشن ٹربیونل کا فیصلہ جاری.    UAE گولڈن جوبلی: گلوبل ولیج تصویری مقابلہ درہم 50,000 تک جیتنے کا موقع.    IMFکے ساتھ معاملات طے پا گئے ، معاہدہ اسی ہفتے ہو گا، شوکت ترین.    UET لاہور انڈرگریجویٹ داخلہ فارم جمع کرانے کی آخری تاریخ.    Major progress in Lahore Police Anti-Drug Campaign.    "میرا ڈونا بلیسڈ ڈریم "کا پہلا ٹریلر جاری.    "پاکستان ممکنہ بھارتی جارحیت کا دفاع کرنے کے لیے تیار ہے".   

چھ ارب ڈالر کے قرض پروگرام پر پاکستان سے مذاکرات میں مثبت پیش رفت: آئی ایم ایف

ویب ڈیسک
20 Oct, 2021

20 اکتوبر ، 2021

ویب ڈیسک
20 Oct, 2021

20 اکتوبر ، 2021

چھ ارب ڈالر کے قرض پروگرام پر پاکستان سے مذاکرات میں مثبت پیش رفت: آئی ایم ایف

post-title

بین الاقوامی مالیاتی فنڈ (آئی ایم ایف) نے کہا ہے کہ 6 ارب ڈالر کے قرض پروگرام پر پاکستان سے مذاکرات میں پیش رفت ہوئی ہے اور آئی ایم ایف مشن مختلف تفصیلات جائزہ لے رہا ہے۔
واشنگٹن میں آئی ایم ایف کے ریجنل ڈائریکٹر برائے مشرقی اور وسطی ایشیا جہاد ازعور نے منگل کو صحافیوں کو بتایا کہ آئی ایم ایف اور حکومت پاکستان کے مابین 6 ارب ڈالر کی توسیعی فنڈ سہولت (ای ایف ایف) کے چھٹے جائزے پر بات چیت ’بہت اچھے قدم’ پر آگے بڑھ گئی ہے۔
انہوں نے نیوز بریفنگ میں بتایا کہ آئی ایم ایف مشن اور حکام فی الحال پروگرام کے چھٹے جائزے کے بارے میں بات چیت کررہے ہیں اور پروگرام کے مختلف پہلوؤں اور  اقدامات کے بارے میں گفتگو کی جاری ہے جن پر حکومت پاکستان فی الحال غور کر رہی ہے۔
انہوں نے مزید کہا کہ بہت اچھی پیش رفت ہوئی ہے، حکام اور آئی ایم ایف مشن مختلف تفصیلات کو دیکھ رہے ہیں۔اس سے قبل ایک میڈیا رپورٹ میں دعویٰ کیا گیا تھا کہ میکرو اکنامک فریم ورک پر اختلافات کی وجہ سے مذاکرات ناکام ہوئے۔
دوسری جانب وزیراعظم کے مشیربرائے خزانہ و ریونیو بھی نیویارک سے واشنگٹن واپس آگئے ہیں۔اس حوالے سے شوکت ترین کےترجمان مزمل اسلم نے ایک ٹوئٹ میں کہا کہ ‘ آئی ایم ایف کے ساتھ جاری بات چیت میں شامل ہونے کے لیے مشیر خزانہ واشنگٹن واپس آئے ہیں’۔
انہوں نے مزید کہا ’بے نتیجہ مذاکرات سے متعلق میڈیا رپورٹس بے بنیاد ہیں’۔
رواں ہفتے کے آغاز میں نیویارک میں ایک بریفنگ کے دوران شوکت ترین نے زور دیا تھا کہ قوم آئی ایم ایف قرض پروگرام کی بحالی سے متعلق قرض مذاکرات ناکام ہونے کے دعووں سے مایوس نہ ہوں۔
انہوں نے کہا تھا کہ ’مذاکرات جاری ہیں اور مثبت انداز میں جاری ہیں، کچھ لوگوں نے پاکستان میں یہ تاثر پیدا کیا ہے کہ ہم ناکام ہوچکے ہیں اور مذاکرات ناکام رہے ہیں ، یہ سراسر جھوٹ ہے’۔ مشیر خزانہ نے کہا تھا کہ گزشتہ ہفتے واشنگٹن میں آئی ایم ایف کے منیجنگ ڈائریکٹر اور دیگر اعلیٰ حکام کے ساتھ ان کی ملاقاتیں مثبت رہیں۔
شوکت ترین نے اس حوالے سے میڈیا رپورٹس کو ’گمراہ کن’ قرار دیتے ہوئے کہا تھا کہ ’لہذا ، ہمیں ان دعوؤں سے مایوس نہیں ہونا چاہیے کہ مذاکرات ناکام ہو گئے ہیں، مجھے نہیں معلوم کہ کن بنیادیوں پر کچھ لوگوں نے یہ تاثر دیا کہ مذاکرات ناکام ہوگئے ہیں’۔
آئی ایم ایف کے ساتھ مذاکرات ناکام ہونے کی میڈیا رپورٹس کے بعد 18 اکتوبر کو انٹر بینک مارکیٹ میں ڈالر کے مقابلے میں روپے کی قدر میں ایک روپے 80 پیسے کی کمی ریکارڈ کی گئی تھی اور انٹر بینک مارکیٹ میں ڈالر 173 روپے کی ریکارڈ سطح پر پہنچ گیا ہے تھا۔
رواں ماہ 4 سے 15 اکتوبر کے دوران واشنگٹن میں پاکستان اور آئی ایم ایف کے درمیان 2019 میں منظور کیے گئے 6 ارب ڈالر کے توسیع شدہ قرض پوگرام کی ایک ارب ڈالر کی قسط جاری کرنے کے لیے مذاکرات ہوئے تھے۔ تاہم رپورٹس میں دعویٰ کیا گیا تھا کہ میکرواکنامک فریم ورک پر اختلافات اور ملکی معیشت پر غیر یقینی صورتحال کی وجہ سے مذاکرات، عملے کی سطح پر معاہدے تک نہیں پہنچ سکے لیکن شوکت ترین ان دعووں کو مسترد کرتے ہوئے ’بالکل غلط’ قرار دیا تھا۔شوکت ترین نے کہا تھا کہ ’اس مرحلے میں حتمی تفصیلات پر کام کیا گیا اور مذاکرات کامیابی سے اختتام کو پہنچیں گے‘۔
 


APNN نیوز، APNN گروپ یا اس کی ادارتی پالیسی کا اس تحریر کے مندرجات سے متفق ہونا ضروری نہیں ہے۔

APNN News, the APNN Group or its editorial policy does not necessarily agree with the contents of this article.


عوامی بحث (0) تبصرے دیکھنے کے لئے کلک کریں Public discussion (0) Click to view comments
28 / 5 / 2021
Monday
1 : 23 : 31 PM